CLINICAL FORM PLEASE FILL

CLINICAL FORM PLEASE FILL
ہیپاٹائٹس مخصوص علاج: تازہ سفید مشروم 10 گرام روزانہ تین بار کھائیں 100گرام تازہ انگورکوآدھا لیٹر پانی میں ابال کرجب نصف پانی سے کم رہ جائے روزانہ اسکو تین دفعہ کر کے پیئں ہیپاٹائٹس میں غذائی ٹانک جڑی بوٹیاں 1جنسینگ2 ایلفالفا3 رئمیز اوفئکانا 4 اچاناکیا پرپوریا ہیپاٹائٹس سی کے مریض کے لۓ اکسیر ہو میو پیتھک اور غذا ئی علاج Carduus Marianus کآردووس مآریانوس Ceanothus کینوتوس Chenanthusچاننٹہوس Chelidonium چالادونیوم تازہ جڑی بوٹیاں اور سبزیاں گاجر؛ادرک کی جڑ؛لال پیاج؛لہسن؛دھنیا؛اجمود؛گوبھی (سرخ اور جامنی)؛ چقندر ؛پودینہ؛ایلو ویرا کا پانی پھل سیب؛اورینج ؛ لائم؛نیبو؛ مصالحہ جات لونگ؛ تلسی؛اجوائن؛ٹکسال

Friday, August 23, 2013

ملائیشیا کا قومی پھول

) گل خطمی(  Hibiscusملائیشیا کا قومی پھول
شفا یابی خواص سے بھرپور خوبصورت شاندار5 پنکھڑیوں والہ ملائیشیا کا قومی عظیم پھول

 حئبئسکئس(گل خطمی( کی اُٹھتی نرم و نازک سی کونپلیں سُر بھری آواز سےچٹخ کر رنگ بھری5پنکھڑیوں اور زيرہ گل آتشبازی کرتی ہوئی باہر نکلتیں  پھول نظرآ تیں  ہیں
سجاوٹی پلانٹ مختلف رنگوں میں  سفید، سرخ، اورینج، پیلے ، گلابی، سرخ ،نارنگی ،نيلا ، فیروزی ،جامنی، بھورا،سرمئی ،چاندی ، سنہرا ،سبز  دنیا کے ہر باغ میں دلکش پھول زینت بنے ہوئے ہیں  دلچسپ  اور حیرت کی یہ  بات  ہے ہندو دیوی کی عبادت کرنے کے لئےان پھولوں کا استعمال کرتے ہیں  پھول اصل میں کھانے کے قابل ہیں اور بحر الکاہل کے جزائروسطی بھارت  میں ان کو  ترکاریاں میں ا کثر سلاد کے طورپراستعمال کرتے ہیں          
حئبئسکئس (گل خطمی) دنیا کے کئی حصوں میں پایا جاتا ہے خاص طور پر استوائی ممالک میں “بانگا رایا “ کے لئے بہت سے مختلف  دیگر نام ہیں چین کا گلاب، روزا ،جنگلي پودا، جوتا پھول، روزا ڈے چین، جھو جن ملائیشیا بھر میں اس عظیم خوبصورت  پھول کی کثرت  سے کاشت ہوتی ہےاسکو "چین کا گلاب"بھی کہتےہیں  پلانٹ کا اصل وطن ہوائی  خیال کیا جاتا ہے.مغربی دنیا میں اسکو ہوائی حئبئسکئس(گل خطمی) کہا جاتا ہے.  جاپاکئسئمامیں ،  جاپاپئشپام ،  جاسئم ،  جابا ،  گئرحار سیمبارئٹحی، چیمپاراٹحی، بانگا رایا اسکو اردو میں گل خیرو ، جنس خیازی، جنس پٹوہ  گل خطمی ، جنس بٹوا  کہتےہیں
 زمانہ قدیم سے مختلف دواؤں کی حیاتیاتی سرگرمیوں کو ظاہر کرتا  ہےروایتی چینی طب اس پلانٹ کی ادویاتی صلاحیت پر روشنی ڈالتی ہےاس کی مخفی شفا یابی قوتوں کوتحقیق شناسی سے ایشیا اور دنیا میں ادویات کے روایتی نظام میں اس پلانٹ کا عام استعمال کیا جاتا ہے
جڑی بوٹیاں کی کارکردگی کا مظاہرہ اور پودوںسے دواؤں تک ایک تحقیق کے مطابق پلانٹ  حئبئسکئس )گل خطمی) کی چائے  کا دماغ، جلد اور ممکن  طور پر معدہ کے کینسر پربہتر اثر ہو تا ہے
 حئبئسکئسHibiscus(گل خطمی ,گل خیرو) ہیومیوپیتھک ریمڈی
  Malvaceaeخاندان سے تعلق رکھتا ہے مختلف رنگوں میں ہوتےہیں
حئبئسکئس(گل خطمی) پھولll  پلانٹ کی شفا یابی کی خصوصیات
حئبئسکئس(گل خطمی) پھول کے قلبی نظام پر مثبت اثرات ہیں دل کی بیماری کے لئے یہ ایک قدرتی علاج ہے باقاعدگی سے چند ہفتوں کے لئے لیا جا ئے خون کی کولیسٹرال اور  ٹریگلئسرئڈیس  کی سطح کو کم بلڈ پریشرخاص طور پر سیسٹولئک میں کمی اور دل کے مرض کے خلاف جنگ میں  حئبئسکئس(گل خطمی) فائد ہ مند  ہے طب چین میں حئبئسکئس(گل خطمی) کا استعمال کثرت  سے کیا جاتا ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) کے پھول سے تیار ہربل چائے پینے سے آرٹیریل ہائی بلڈ پریشردل کے مسائل، ہائی بلڈ پریشر کو کم کرنے میں قابل قدر مدد ملتی ہے
آرٹیریزمیں چربی کے ذخائر کی تعمیر کو کم کرتا  ہے اینٹی آکسیڈینٹ  پر مشتمل ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) کے پھول کی دو پنکھڑیاں کھولتے ہوئے ایک کپ پانی میں حل کریں اس میں شہد کا ایک چائے کا چمچ شامل کریں اور روزانہ اس کا پینا شروع کریں دل کا مسئلہ کچھ دنوں میں اس تھراپی سے حل ہوجائےگا
حئبئسکئس(گل خطمی) کے  پھول ذیابیطس اور  ٹائپ 2 ذیابیطس میں مبتلا مریضوں کے لئے قابل قدر ہیں
حئبئسکئس(گل خطمی)  کےپھول جگر کے نقصان اور اس کے مائيکروبيل کے خلاف حفاظت کرتا ہےباقاعدگی سے چند ہفتوں کے لئے لیا جا ئے تو جگر کو تقویت ملتی ہے
بد ہجمی اور قبض میں فائد ہ  اضافہ بھوک میں مدد ملتی ہے دافع  قبض ہے
 حئبئسکئس(گل خطمی) کے پھول بخار، کھانسی اور کھلے گھاووں، شق ہونا،  ورم کن پھيڑ کےعلاج میں استعمال کیا جاتا ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) اور گلاب ہپ کی چائے بنا کر پینےسے بخار کو کم کرنے میں مدد ملتی ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) پھول گلے سے بلغم ملائم کرنے نکالنے، دافع بُخار، سوزش، کسیلی،حیپوگلیسمئک  اينٹي مائيکروبيل ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) پھول اینٹی آکسیڈینٹ کے طور پر بھی سوزش کم کرنے کی خصوصیات ہیں جو  کیانئڈان  کے طور پر ایک فلاونوئڈ  ہے.
حئبئسکئس(گل خطمی) کی پنکھڑیوں کی پیسٹ ورم اور سر درد سے چھٹکارا حاصل کرنے کے لئے ایک  پلٹس کے طور پر اس کا استعمال کریں
حیض کی خرابی کی شکایت جیسی  بیماریوں سے نمٹنے کے لئے فائد ہ مند  ہے
پٹھوں کی اينٹھن اور درد حیض میں ٹھنڈ ی حيضي اخراج کو زيادہ کرنے میں فائد ہ مند  ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) پھول یسٹروجن اور  پرجسٹرون توازن ریگولیٹری کے لئے یکساں مفید ہے درد  حیض کے مسائل کے علاج کے لئے استعمال کیا جا تا ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) کی پتیوں کا رس پانی میں ملا کر ليکوريا  کے لئے ایک قدرتی ہوم علاج کے طور پر کام کرتا ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) کے 2پھول پیس  کردودھ کے ایک گلاس میں پیسٹ شامل کریں اور ماہواری کے دوران خالی پیٹ  ليا جا سکتا ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) کے پھول میں مخالف جنين صلاحیت ہے قدرتی پیدائش کنٹرول کے لئے استعمال کیا جا تا ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) کے پھول کی ان ٹیک یہ ایک ینجائم  آئنحئبئٹور  پر مشتمل ہے وزن میں کمی میں مدد کر تے ہیں کاربوہائیڈریٹ کے جذب کو کم کرنے میں مدد کر تے ہیں
حئبئسکئس(گل خطمی) کے 5پھول آدھے لیٹر پانی میں رات کو ڈال دیں اگلے پورے دن اس پانی کو بار بار پیتے رہیں دو سے تین دن کے لئے یہ تھراپی پیشاب کی خرابی کے علاج کے لئے اکسیر ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) کے پھول سے تیار ہربل چائے ایک قدرتی  پیشاب آور کے طور پر کام کر تی ہے اور گردے کے مسائل میں مبتلا افراد کے لئے مفید ہے اور شہوت انگيز ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) خشک پھول کی کلیوں شہد کے ساتھ دو چمچ لینے سے پیشاب کے دوران جلن میں قابل قدر ہیں گرم دودھ کے ساتھ ملا کر دن میں ایک یا دو بار استعمال کیا جاتا ہے
حئبئسکئس(گل خطمی) ایک پھول کی پنکھڑیوں لےکر اور انہیں پیسکر لسی کے ایک گلاس میں یہ پیسٹ ملا کر موسم گرما میں قدرتی ٹھنڈک کے لئےپیتے ہیں.
بال تیزی سے گرنے سے نمٹنے کے لئے ناریل کے تیل میں حئبئسکئس(گل خطمی) کے خشک پھول ملا کر اور اس میں ابال کر اچھی طرح حل کر نے کی ضرورت ہے ٹھنڈا ہونے پر نچوڑ لیں اور باقاعدگی کے ساتھ اس تیل کی کھوپڑی پر مساج کر یں
حئبئسکئس(گل خطمی) کے پھول خشکی کو کنٹرول اور  خشکی کی وجہ سے بال گرنے کو روکتا ہے بالوں اور کھوپڑی کے لئے ایک مؤثر ٹانک کے طور پر استعمال  کیا جاتا ہے اس کا استعمال بالوں کو فروغ دیتا ہے اور خشکی کو کم کر دیتا ہے
بالوں کی دیکھ بھال کے لئے سب سے بہتر حئبئسکئس(گل خطمی) گھر یلو علاج ہے حئبئسکئس(گل خطمی) پھول اور پتیاں رات بھر سادہ پانی میں پڑیں رہیں اچھی طرح حل کر نے کی ضرورت پھر نچوڑ کر چھان لیں اس  پانی سے بالوں کو دھو لیں 15-20 منٹ کے بعد پانی کے ساتھ ہلکے شیمپو سے بالوں کو دھو لیں
مہندی پیسٹ میں حئبئسکئس(گل خطمی) پنکھڑیوں (پنکھڑیوں پیسنے سے پہلے پانچ منٹ کے لئے پانی میں بھیگی کرہنی چاہئے) شامل کر سکتے ہیں مہندی پیسٹ بالوں میں استعمال کرنی چاہیں.
حئبئسکئس(گل خطمی) پتیوں کی ایک مٹھی بھر ایک گلاس پانی میں ابال کر ٹھنڈا کر کے چھان لیں ایک نمبو نچوڑ کر اپنے بالوں کو دھونے سے پہلے اپنے سر پر لگایں یہ قدرتی علاج ہے بالوں کے نقصان کو کم کرنے میں مدد ملتی ہے.
حئبئسکئس(گل خطمی) کے پتے پالک کے متبادل طور پر استعمال ہو رہے ہیں آئرن سے بھر پور ہوتے ہیں عام طور پر پھول خوردنی جام ,جیلی اور مشروبات بنانے میں استعمال ہوتے ہیں
بھارت میں حئبئسکئس(گل خطمی) کے پھولوں کو مختلف رنگوں کے لئے کلر ڈائی کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے

نباتاتی کیمیا ئی اجزاء
فلاوونوئڈس , ایسکوربئک ایسڈ، ,  ساپونان, اینٹہوکیانان, پولیپحینولس اوزالاٹ اور پحیٹاٹ ،ایلکالوئڈس ,  ٹانان فیرئک ٹحئوکیانیٹ  اور  مالونیلڈہیڈ
ایمئلزیونس نٹہوکیانانس، گوزیپٹان اور  حئبئسکان لانولیئک ایسڈ اعلی
خصوصیات  ہیں نباتاتی کیمیا ئی اجزاء اور ایکزبٹ ینٹی آکسیڈینٹ
غذائی اجزاء
 خشک حئبئسکئس (گل خطمی) پھول کے غذائی اجزاء کی قدر100گرام میں
توانائی      49   کیلوری
 فائبر        2.3     گرام
 پروٹین     1.9     گرام
  چربی    0.1     گرام 
کل کاربوہائیڈریٹ 12.3  گرام 
 کیلشیم  1.72 ملی گرام
آئرن       57   ملی گرام
 وٹامن سی  14     ملی گرام
بیٹا کیروٹین  300 ملی گرام

**احتیاطی تدابیر**
وہ لوگ جو (گل خطمی)  hibiscus الرجی کے لئے حساس ہیں احتیاط کر یں
 (ماخذ: مختلف ویب سائٹس)

ہومیوپیتھک ڈاکڑ فتحیاب علی سید بی ایس سی (غذااورغذائیت)
ڈی ایچ ایم ایس[ 1974 لاہور]آر ایم پی رجسڑیشن 9027
نیشنل کونسل فار ہومیوپیتھی حکومت پاکستان
www.nutritionisthomeopath.blogspot.com
https://www.facebook.com/pages/Homeopathynutritionherbs/138439162917723
https://www.facebook.com/fatehyabali.syed

No comments:

Post a Comment