CLINICAL FORM PLEASE FILL

CLINICAL FORM PLEASE FILL
ہیپاٹائٹس مخصوص علاج: تازہ سفید مشروم 10 گرام روزانہ تین بار کھائیں 100گرام تازہ انگورکوآدھا لیٹر پانی میں ابال کرجب نصف پانی سے کم رہ جائے روزانہ اسکو تین دفعہ کر کے پیئں ہیپاٹائٹس میں غذائی ٹانک جڑی بوٹیاں 1جنسینگ2 ایلفالفا3 رئمیز اوفئکانا 4 اچاناکیا پرپوریا ہیپاٹائٹس سی کے مریض کے لۓ اکسیر ہو میو پیتھک اور غذا ئی علاج Carduus Marianus کآردووس مآریانوس Ceanothus کینوتوس Chenanthusچاننٹہوس Chelidonium چالادونیوم تازہ جڑی بوٹیاں اور سبزیاں گاجر؛ادرک کی جڑ؛لال پیاج؛لہسن؛دھنیا؛اجمود؛گوبھی (سرخ اور جامنی)؛ چقندر ؛پودینہ؛ایلو ویرا کا پانی پھل سیب؛اورینج ؛ لائم؛نیبو؛ مصالحہ جات لونگ؛ تلسی؛اجوائن؛ٹکسال

Friday, October 12, 2018

اروپوربیا ٹریونا

                                                                                                                                                                   اروپوربیا ٹریونا       

 

اروپوربیا ٹریونا  کو مقامی  وسطی افریقی دودھ کے درخت کے طور پر بھی جانا جاتا ہے یہ پودا برصغیر میں ہر جگہ اور پوری دُنیا میں پھیل چکا ہے اروپوربیا ٹریونا  رسیلا کیکٹسس ایک سیدھاسلیم پلانٹ ہے  1.5 - 3 میٹرتک بڑھتا ہے جو تین یا  چار اطراف میں چورس ہے ہلکے سبز پیٹرن کے ساتھ ہی سیاہ سبز  پتیوں میں ہر ریز  پر دو کانٹوں کے درمیان سے بڑھ جاتیں    ہیں سیدھے اوپر کو بڑھتی ہیں اور شاخوں کی تعداد بھی  اوپر کو     بڑھتی ہے سٹیم اور شاخیں  سیدھا اوپر کو بڑھتی ہیں سٹیم اور شاخیں دو یا تین  اطراف میں ہوتیں ہیں   ہر قطار کے دو کناروں کے درمیان ڈھونڈے ہوئے پتے بڑھتے ہیں اس پودے کے حصے جو زمین سے اوپر بڑھتے ہیں  دوا  بنانے کے لئے استعمال ہوتے ہیں  اس  کی  کئی   اقسام ہیں سجاوٹی پودوں کے طور پر یورپین ممالک کے درمیان مقبول ہو گئےہیں ریتلی  مٹی میں خوب  پروان   چڑھتا  ہے یہ کیڑوں مکوڑوں سےفری پلانٹ ہے زہریلا ہے اور  چھونے سے جلدی جلن پیدا ہو سکتی ہے

اروپوربیا ٹریونا  کی  پھولوں اور جڑوں میں ادوایاتی   خصوصیات موجود ہیں جبکہ بعض حصوں کو اس کےادوایات  بنانے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے لیکن لیٹیکس کافی زہریلا ہے جلد اور جسم کونقصان پہنچا سکتا ہےاس سے محفوظ رہنا  چاہیے

اروپوربیا ٹریونا  اور دیگرجڑی بوٹی پر   کام   کرنے اورسنبھالنے کےلئے دستانے پہننے  ضروری ہیں پلانٹ کے تقریبا تمام حصوں کی طبی اہمیت ہے جب ایک پتی یا سٹیم کا حصہ کاٹ جائے  تو دودھ باہر  بہے نکل پڑتا ہے

غذائیت  

سوڈیم، پوٹاشیم، کیلشیم، اور لتیم  پلانٹ میں بیٹا کیروٹین، وٹامن سی، اور فینولوکس بھی شامل ہیں

اروپوربیا ٹریونا  کےحصے جو زمین سے اوپر بڑھتے ہیں وہ  دوا بننے کے لئے استعمال ہوتے ہیں اروپوربیا ٹریونا  دمہ  ؛برونچائٹس اور سینے کی  بیماریوں کے لئے استعمال کیا جاتا ہےیہ ناک اور حلق، گلے ؛گھاس بخار  استعمال کیا جاتا ہے

سائنسدانوں نے مظاہرہ کیا ہے کہ خالص پروٹین کئی ٹیومر سیل لائنوں کے ا ضافہ کو روک سکتی ہے اس پراپرٹی سے پتہ چلتا ہے کہ اس پودے کے لیٹیکس پروٹین  جو  بہت تیز ہوتی ہے  یہ ٹیومر کے خلاف اور کینسر کے علاج کے لئے کلینیکل ٹرائلز پر غور کیا جا رہا ہے بیکٹیریا کے خلاف دفاعی نظام کو بہتر بنانے اور تشخیص اور علاج کے لئے بائیوڈیسکین میں بایوکیکٹو پروٹین پلانٹ سےنکالا  لیکٹک ایک فعال مادہ ہے  جو اسکوڈور اور اسوریل کے طور پر مانا جاتا ہے کینسر کے علاج میں استعمالہوتاہے

  لیکٹینس اینٹی ویرل، اینٹی بیکٹیریل، اینٹی فنگل اور کیڑے مار کے طور پر استعمال ہورہی ہے

اروپوربیا ٹریونا  بڑے پیمانے پر سانس کے راستے کو صاف کرنے اور دمہ کے علاج کے لئے بڑے پیمانے پر استعمال کیا جاتا ہے اس میں برونکو-نکاسی اثر ہوتا ہے  بیماریوں کے علامات کو دور کرنے میں مدد ملتی ہے

اروپوربیا ٹریونا  جڑی بوٹیوں کا عام طور پر برونائٹس اور دمہ سے متعلق مسائل کا علاج کرنے کے لئے استعمال ہوتا ہے یہ بھی خیال ہے کہ سردی اور فلو کے ساتھ منسلک علامات سے ریلیف فراہم کی جاتی ہے دیگر صحت کے فوائد اور پھول سے بنائی گئی آنکھ میں انفیکشن اور بیماریوں جیسے کنجیوٹائیوٹائٹس کا علاج کر سکتا ہے

اروپوربیا ٹریونا  اینٹی امینٹک خصوصیات کے لئے بھی جانا جاتا ہے  اور یہ کیڑے اور دیگر پرجیوی حیاتیات سے چھٹکارا حاصل کرنے کے لئے استعمال کیا جا سکتا ہے باد مہرہ کے علاج کے لئے بھی استعمال کیا جا سکتا ہے ڈینگی بخار کے معاملات میں شفا یابی کو فروغ دینے کے لئے اس  پلانٹ کا استعمال  کیا  جاتا ہے دودھ پالنے والی ماؤں میں دودھ کی پیداوار کو فروغ دینے کے لئے اروپوربیا ٹریونا  اچھا سمجھا جاتا ہے

سوزاک اور امراض خبیثہ بیماریوں کے علاج میں اروپوربیا ٹریونا  استعمال کیا جا سکتا ہے قبل از وقت انزال اور دیگر جنسی امراض کے علاج میں مفید ہے 

اروپوربیا ٹریونا  اینٹی وائرل خصوصیات پیچش اور اسہال کے علاج میں استعمال کیا گیا ہے اور علامات کو کم کرنے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے.

اروپوربیا ٹریونا  چینی ادویات میں جڑی بوٹیوں سے جسم   سے پانی نکالنا اور اس طرح لیمف نوڈس کی ادیمہ اور سوزش کو کم کرنے لئے استعمال کیا جاتا ہے

 احتیاطی تدابیر / سائڈ اثرات / انتباہات
مختلف قسم کے دواؤں کی خصوصیات کے ساتھ جڑی بوٹیوں کے کسی بھی پلانٹ کا استعمال صرف طبی پریکٹیشنر کی نگرانی کے تحت ہی کیا جانا چاہئے
.

ہیومیوپیتھک ڈاکڑ فتحیاب علی سید  بی ایس سی (غذااورغذائیت)ڈی ایچ ایم ایس[ 1974 لاہور]آر ایم پی (نیشنل کونسل
 فار ہومیوپیتھی حکومت پاکستان)
رجسٹریشن نمبر 9027

تھراپیز٭غذااور غذائیت٭ ہیومیوپیتھی٭ ہربل میڈیسن٭ کلینیکل Meditation طبی 



Friday, October 5, 2018

                     یوکا شائڈریرا   پہا    روں;چٹانوں ;صحرا ئیوں  اورریگستانوں     کا      شہزادہ  

یوکا شائڈریرا ایک سدا          بہا  ر  سرسبز  درمیانہ سا چٹانی صحرا ئی درخت ہے جس کی لمبائی تقریبا 16 فیٹ  اسکومکمل سورج اور عمدہ مٹی میں عمدہ نکاسی راس آتی       ہے اس کے علاوہ موسم گرما میں پانی کی ضرورت نہیں ہوتی یوکا شائڈریرا  پہا    روں،  چٹانوں ؛صحرا ئیوں ریگستانوں     کا      شہزادہ  اپنے  سر پر  نوکدار پتیوں کا تاج در  تاج پہنے ہوئے   اور جب جوانی آتی     ہےتو چاندی     کی       پنکڑیاں  جیسا     پھول  جیسا   کہ کراؤن سر پر نکل آتا ہے  یوکا شائڈریرا  کی بڑوھتی  آہستہ   آہستہ ہوتی ہے،   گھروں     میں گملوں  میں بھی جنم   لے لیتا ہے  اورخوب  پرواں چڑہتا    ہے اپنی جڑوں  سےڈھروں بچے پیدا کرتا ہے   اپنی   حفاظت  خود  خوب  کرنا جانتا ہے جنگلی مخلوق  اس کے قریب نہیں آتے  جانور  اور چوپائے اس   کو منہ نہیں  مارتے سکتے مغربی ممالک   میں ہسپانوی خنجر کے نام سے جانا جاتا ہے
جڑی   بوٹی راوائتی ادویاتی سستم میں یوکی کی جڑ میں کاربوہائیڈریٹ فائبر؛پروٹین اور چربی؛ کی  کافی   مقدار  میں ایک  اچھا حصہ  غذائیت والے عناصر بھی شامل ہیں ؛ وٹامن سی؛ تھامین ؛ فولیت؛ پوٹاشیم ؛تانبے ؛آئرن؛ مینگنیج ؛فاسفورس ؛  زنک ؛ میگنیشیم ؛ کیلشیم؛ سیلینیم ؛ینٹوتینک ایسڈ؛ وٹامن  ای؛ ربفلووینین؛تھامین؛ وٹامن بی 6؛ ربفلووینین ؛ نائیسن
    یوکا شائڈریرا فائدہ مند اینٹی آکسائڈنٹ اور وٹامن سی کے ساتھ بھرپور مدافعتی نظام کو صحت مند فروغ دینے کے لئے حقیقت میں غذائیت اور میٹابولزم کے تحقیق میں شائع ہونے والے ایک مطالعہ سے پتہ چلتا ہے  وٹامن سی کافی  علامات کو کم کرنے اور تنفس کے انفیکشنز جیسے عام سردی کی مدت کو کم کرنے میں کامیاب ہے یہ نمونیا، ملیریا اور اسہال کے انفیکشن میں بہتر  ہے اینٹی آکسائڈینٹس مدافعتی خلیات کو نقصان پہنچانے کے بچنے میں مدددیتی  ہےیوکی مضبوط مدافعتی نظام کو برقرار رکھنے کے مجموعی صحت کی کلید  ی کام انجام دیتا ہے مدافعتی نظام بیرونی حملہ آوروں کو دور کرنے اور بیماری اور انفیکشن کے خلاف حفاظت کے لئے جسم سے نقصان دہ بیکٹیریا، وائرس اور فنگی  کو دور  رکھنے کا  ذمہ دار ہے.
یوککا  اینٹی وائڈینٹس میں زیادہ  مفید اورفائدہ مند مرکبات ہیں جو آکسائڈیٹک کشیدگی کو روکنے اور خلیوں کو نقصان پہنچا نے والےریڈیکلز کو غیر جانبدار کرتی ہیں تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ اینٹی آکسائڈنٹ مجموعی صحت میں مرکزی کردار ادا کرتے ہیں اور کینسر، ذیابیطس اور دل کی بیماری سمیت کئی دائمی حالات کے خلاف حفاظتی ہوسکتے ہیں طویل عرصہ سے گٹھیا نما ورم مفاصل کے علامات کی روک تھام لئے یوکا استعمال کیا  جاتا  ہے اور یوکا کی اکثر ٹیبلٹ فارم اسی مقصد کے لئے استعمال  کرتے ہیں یوکا میں اینٹی سوزش کی خصوصیات ہیں جو درد کو ختم کرنے میں مدد  دیتا  ہے
گٹھیا نما ورم مفاصل ایک حالت ہے جو جوڑوں میں دردناک سوجن اور سختی کی طرف اشارہ کرتی ہے  اینٹی آکسائڈنٹ اور مینگنیج دونوں  ریمیٹائڈ گٹھائی علامات سے امدادی طور پر فراہم کرنے میں مفید ثابت ہوسکتے ہیں   کچھ تحقیقات سے پتہ چلتا ہے کہ گٹھیا نما ورم مفاصل خطرے کو   یوکا  آغاز کو روک سکتا ہے یوکا میں طاقتور اینٹی آکسائڈنٹ اور سوپونز بھی شامل ہیں یہ مادہ گہری علامات کو کم کر سکتا ہے
حالیہ ریسرچ اینٹی سوزش کی ذریعے گٹھیا نما ورم مفاصل کی روک تھام میں یوکا  یوکی میں انسداد سوزش پولوفینولوکس جیسے ریسورٹریٹول یوکا پاؤڈر میں ریورورٹول  شامل ہے یہ جلد کی حالت بہتر  اورزخموں کا علاج کرنے کے لئے استعمال کیا جا تا ہے
ہیومیوپیتھک ڈاکڑ فتحیاب علی سید  بی ایس سی (غذااورغذائیت)ڈی ایچ ایم ایس[ 1974 لاہور]آر ایم پی (نیشنل کونسل فار ہومیوپیتھی حکومت پاکستان)رجسٹریشن نمبر 9027
تھراپیز٭غذااور غذائیت٭ ہیومیوپیتھی٭ ہربل میڈیسن٭ کلینیکل Meditation طبی 

Friday, October 2, 2015

اطالوی ڈاکٹر Rubini نے 1864 میں کیکٹس گرانڈی فلورس کو ہومیوپیتھک ادویات میں شامل کیا تھا
قدرتی پودوں میں بیماریوں کے خلاف بھرپور شفا یابی کی خصوصیات ہوتیں ہیں خاص کر
صحرائی کیکٹس پودے بیابان میں رہتے تھے لیکن ان کے حیرت انگیز غذائی اور ادویاتی فوائد  ان کو نہ
صرف ریگستان  سےہرباغ اورگھر میں کھنیچ   لائیں ہیں
بلکہ یہ  ہرگروسری سٹور، غذائیت کے اسٹورز خصوصی  طور پر   فينسی دکانو ں پر کیکٹس کی معروف مصنوعات موجود ہیں صرف کیکٹس ہی نہیں بلکہ کانٹیدار ناشپاتیاں کیکٹس کی اقسام بھی ہیں کیکٹس متبادل ادویات کی دنیا میں بھی مقبول ہیں اسلئے کاشت بھی کیئے جاتےہیں کیکٹس  کے ہر جزو کو جسم کی طاقت میں اضافہ کرنے کے لئے بھی استعمال کیا جا تا ہے
روایتی طب کیکٹس پلانٹ کی ادویاتی صلاحیت پر روشنی ڈالتی ہےاس کی مخفی شفا یابی قوتوں کوتحقیق شناسی سے ایشیا اور دنیا میں ادویات کے روایتی نظام میں کیکٹس پلانٹ کا عام استعمال کیا جاتا ہے اطالوی ڈاکٹر Rubini نے 1864 میں کیکٹس گرانڈی فلورس کو ہومیوپیتھک ادویات میں شامل کیا تھا کیکٹس گرانڈی فلورس ہومیوپیتھک علاج میں اس کا مدر ٹنگچر درد قلب جب فو لادی پنجہ یا لو ہے کا شکنجہ دل کو بھینچتا ہے۔ یہ عجیب قسم کا احساس کیکٹس کی ایک عام علا مت بھی ہے اور دیگر اعضاء مثلا ً ‘چھا تی‘ مثانہ‘ رحم وغیرہ میں بھی یہ بھینچے جا نے یا سکڑ نے کا احسا س پا یا جا تا ہے۔ سر پر فشارخون کی وجہ سے ایسا بھاری پن محسوس ہورہا ہو دل کے ارد گرد سختی اور جکڑن محسوس ہورہی ہو اور بوجھ کا احسا س پا یا جا تا ہے ایک طویل عرصے سے کیکٹس کو بیماریوں کے  معتدل علاج کے طور پر استعمال کیا جاتا  ہے
کانٹیدار ناشپاتیاں کیکٹس کے کانٹوں کی دو اقسام ہیں ایک فلیٹ گل شکل ہےان پر پھول اور پھل آتے ہیں
بھارت اور میکسیکو کے قبیلے کیکٹس کو کھانے کی مختلف اقسام کے طور پر استعمال کرتے ہیں پنیر،سوپ، جام بناتے ہیں
موسمیاتی تبدیلیوں اور فوڈ پروسیسنگ کی تمام ضروریات کو ایڈجسٹ کرنے کی تشکیل کے لئے  کیکٹس استعمال ہوتے ہیں نہ صرف یہ اکثرایلو ویرا کی  طرح کیکٹس  بھی جلد پر سوزش یا ناسور کو مندمل کرنے میں استعمال ہوتے ہیں
کیکٹس کیڑے کے کاٹنے کی سوزش  کےاثرات کے  خلاف بہت تیز  ہوتے ہیں کھجلی لالی اور یہاں تک کہ الرجک رد عمل بھی دور کرتے ہیں کیا خوب اور مؤثر کانٹیدار پلانٹ ہے؟
ایک ریسرچ میں کیکٹس کےایک ٹکڑا میں فلیوو نائڈذ بکثرت ہوتا ہے فلیوو نائڈذ خاص طور مخالف آکسی ڈنٹ کی صلاحیت کے لئے جانا جاتا ہے اسلئے اس کو قدرتی حیاتیاتی ردعمل ترمیم کار بھی کہتے ہیں دوسرے مادہ ایلرجی اور وائرس کے جسم کے رد عمل تبدیل کرنے کی حمایت کرنے کے قابل ہے
بہت سی رپورٹیں میں کیکٹس  کے فلیوو نائڈذ کے کینسر یا سَرطانی مادَّہ کے خلاف ایک اہم کردار اور کینسر سَرطانی مادَّہ کے مخالف سرگرمی  کوتشکیل دیتے ہیں
فلیوو نائڈذ سبز چائے، چاکلیٹ، اور پھلوں کی کچھ اقسام میں بھی موجود ہے
کیکٹس کانٹیدار ناشپاتیوں کا  ہر حصے استعمال کیا جا سکتاہے جیسے ایک سبز بڑی فلیٹ انڈ نما پلیٹ
کیکٹس میں  غذائی پر افروز معدنیات اجزاء  اور پوٹاشیم، کیلشیم، آئرن، میگنیشیم کے
علاوہ بیٹا کروٹین اور ابتدائی شکل میں وٹامن اے اور سی   بھی پایا جاتےہیں یہ تمام اجزاء  پالک میں بھی پائے جاتے ہیں اکثر غذائی سبزیوں کو صحت کے لئے استعمال کیا جاتا ہے.
تحقیق سے ظاہر ہوتا ہے کیکٹس انسانی جسم کے اندرنی شفائی عمل کو تیز کرتا ہے مدافعتی نظام کی حفاظت کرتا ہے
اور جسم میں آزاد ذراتی سے چھٹکارا حاصل  کرواتے ہیں
کانٹیدار ناشپاتیاں  بڑی عمر کے بد اثرات کو سست کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں اور مسلسل عضاء کی بہتر نشوونمااور عضاء   کےکام میں مدد گار ہوتے ہیں
 اس کے علاوہ تجربہ سے ثابت ہوا  کیکٹس پھل مؤثر طریقے سے بلڈ پریشر کو کم اور ایل ڈی ایل کی صحت مند سطح کو برقرار رکھنے میں مدد گار ہے کولیسٹرول کی سطح کم اور زیادہ کارڈیک کام کے بوجھ کے خطرے کو کم سے کم کرتا ہے خاص کر کانٹیدار  کیکٹس ناشپاتیاں
کھلاڑی زیادہ توانائی حاصل کرنے کے لئے کیکٹس ناشپاتیاں کھانا شروع کر تے ہیں عام مشق پر اور چوٹ ،بیماری کے بعد کی مشق پر کیکٹس  کا  رس تیزی سے شفا یابی کرتاہے کم چربی، اعلی فائبر، اعلی غذائیت کے علاوہ
کانٹیدار ناشپاتیاں کیکٹس کم چینی جڑی بوٹیوں کی فہرست پر سب سے اوپر ہے
جرنل ایٹحنو فارما کولوجی میں آخری اشاعت میں ذیابیطس کی دیکھ بھال میں فلیٹ کیکٹس ذیابیطس قسم2 کے مؤثر علاج میں اہم کردار ادا کر رہا ہے
یریزونا کی یونیورسٹی کی تحقیق پیکٹین کیکٹس کے پھل کےمواد میں پایا جاتا ہے
 
پیکٹین سےخون میں گلوکوز کی سطح کو مستحکم کرنے میں مدد ملتی ہے  ایل ڈی ایل کولیسٹرول کی سطح کو کم کرنے میں مؤثر پائے جاتے ہیں کیکٹس یا ذیابیطس کی روک تھام  اور خطرے کو کم سے کم کرنےمیں مدد گار ہے
آپ بھی گھر   میں گملے  میں صحرئی کیکٹس لگائیں  اور  اس کی افادیت سے   فوائد اٹھائیں    شکریہ
https://www.facebook.com/pages/Homeopathynutritionherbs/138439162917723?